ایم کیو ایم شکاگو چیپٹر کے زیرِ اہتمام شکاگو ٹریبون اور ڈبلیو جی این ریڈیو کے دفاتر سے متسل گراؤنڈ واقع مشی گن ایوینیو شکاگو میں ایک پرامن مظاہرا کیا گیا
ایم کیو ایم شکاگو چیپٹر کے زیرِ اہتمام شکاگو ٹریبون اور ڈبلیو جی این ریڈیو کے دفاتر سے متسل گراؤنڈ واقع مشی گن ایوینیو شکاگو میں ایک پرامن مظاہرا کیا گیا، مظاہرے میں ایم کیو ایم کے کارکنان  و ہمدردوں اور خواتین نے بھرپور شرکت کی- مظاہرے کے شرکا ُ نے پلے کارڈز اٹھائے ہوئے تھے جن پر کراچی میں مہاجروں پر ڈھائے جانے والے مظالم اور کارکنوں و راہنماؤں کی گرفتاریوں سے متعلق مطالبات درج تھے، مظاہرین کا مطالبہ تھا کہ کراچی حیدرآباد سمیت سندھ کے شہروں میں ایم کیو ایم کے کارکنوں و راہنماؤں کی زندگیاں اجیرن بنا دی گئ ہیں جبکہ کلعدم تنظیموں کے دہشت گرد سرکاری سرپرستی میں آزادانہ دندناتے پھر رہے ہیں جسکی تازہ ترین مثال ناظم آباد میں بے گناہ عزاداران پر ان دہشت گردوں کا سفاکانہ حملہ ہے جس کے نتیجے میں پانچ عزاداران شہید اور متعدد زخمی ہوئے-
 
مظاہرہن کا مطالبہ تھا کہ پاکستان کی چوتھی بڑی جماعت کے لیڈر اور اتِحاد بین المسلمین و بین المزاہب کے سب سے بڑے داعی جناب الطاف حسین کی آزادئِ اظہار پر سے فوری پابندی ہٹائ جائے اور انہیں پاکستان کی سیاست میں اپنا بھرپور کردار ادا کرنے دیا جائے-
 
مظاہرین کے پرجوش نعروں سے راغب ہو کر مقامی و غیر ملکی سیاحوں نے ان کے مطالبات سے آگاہی حاصل کی اور اپنی ہمدردی کا اظہار کیا-
 
مظاہرے میں ایم کیو ایم یو ایس اے کی سینٹرل کمیٹی کے رکن شمیم صدیقی، ایم کیو ایم یو ایس اے شعبہُ خواتین کی انچارج تحریم شاہد، سابق حق پرست رکنِ اسمبلی سہیل یوسف زئ، جوائینٹ انچارج و اراکینِ شکاگو چیپٹر کمیٹی سمیت سینکڑوں کارکنان نے شرکت کی-
 
آخر میں شرکائے مظاہرہ پرامن طور پر منتشر ہو گئے